میرے چاروں طرف افق ہے جو ایک پردہء سیمیں کی طرح فضائے بسیط میں پھیلا ہوا ہے،واقعات مستقبل کے افق سے نمودار ہو کر ماضی کے افق میں چلے جاتے ہیں،لیکن گم نہیں ہوتے،موقع محل،اسے واپس تحت الشعور سے شعور میں لے آتا ہے، شعور انسانی افق ہے،جس سے جھانک کر وہ مستقبل کےآئینہ ادراک میں دیکھتا ہے ۔
دوستو ! اُفق کے پار سب دیکھتے ہیں ۔ لیکن توجہ نہیں دیتے۔ آپ کی توجہ مبذول کروانے کے لئے "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ پوسٹ ہونے کے بعد یہ آپ کے ہوئے ، آپ انہیں کہیں بھی کاپی پیسٹ کر سکتے ہیں ، کسی اجازت کی ضرورت نہیں !( مہاجرزادہ)

ہفتہ، 11 جنوری، 2020

شگفتگو محفل مزاحیہ مناثرہ -2020

٭٭٭  مزاح نگارانِ کی محافل قہقہہ آور٭٭٭
 ٭
ارشدعلی  مرشد محترمہ شازیہ مفتی


  ٭٭٭سال2020 ٭٭٭
نشست سال ماہ تاریخ مقام مبصّر
17 2020 جنوری 11 فردوس عالم حبیبہ طلعت
18 2020 فروری 8 عاطف مرزا عاطف مرزا
19 2020 مارچ 14 ارشد علی مرشد عاطف مرزا
20 2020 اپریل 11 وٹس ایپ عاطف مرزا
21 2020 مئی 8 وٹس ایپ حبیبہ طلعت
22 2020 جون 13 وٹس ایپ حسیب اسیر
23 2020 جولائی 11

24 2020 اگست 15

25 2020 ستمبر 12

26 2020 اکتوبر 10

27 2020 نومبر 14

28 2020 دسمبر 12


٭٭٭  مزاح نگارانِ کی محافل قہقہہ آور٭٭٭
٭٭٭سال 2018 ٭٭٭
٭٭٭  مزاح نگارانِ کی محافل قہقہہ آور٭٭٭
٭٭٭سال 2019 ٭٭٭




کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

خیال رہے کہ "اُفق کے پار" یا میرے دیگر بلاگ کے،جملہ حقوق محفوظ نہیں ۔ !

افق کے پار
دیکھنے والوں کو اگر میرا یہ مضمون پسند آئے تو دوستوں کو بھی بتائیے ۔ آپ اِسے کہیں بھی کاپی اور پیسٹ کر سکتے ہیں ۔ ۔ اگر آپ کو شوق ہے کہ زیادہ لوگ آپ کو پڑھیں تو اپنا بلاگ بنائیں ۔